فلم ”پدماوت‘ ‘ پر مسلم ملک میں پابندی عائد

فلم ”پدماوت‘ ‘ پر مسلم ملک میں پابندی عائد

ممبئی: گزشتہ دنوں ریلیز 25 جنوری کو ریلیز ہونیوالی بالی ووڈ کی متنازع فلم ’پدماوت‘ پرمسلمانوں کے سب سے بڑے ملک ملائیشیا میں پابندی عائد کردی گئی۔


رپورٹس کے مطابق ہدایت کار سنجے لیلا بھنسالی کی فلم ” پدماوت “ اپنی ریلیز کے ابتدائی 4 دن کے اندر بھارت بھر سے ریکارڈ کمائی 100 کروڑ روپے کما کر مخالفین کو خاموش رہنے پر بھی مجبور کردیا۔تاہم دوسری جانب ملائیشیا کے نیشنل فلم سینسر بورڈ نے فلم میں اسلام کے حساس موضوعات کو چھیڑنے کے باعث اس پر پابندی عائد کردی۔

نشریاتی ادارے نے ملائیشیا سینسر فلم بورڈ کے چیئرمین محمد زمبیری عبدالعزیز کے حوالے سے بتایا کہ ’پدماوت‘ میں اسلام کے حساس موضوعات کو چھیڑا گیا ہے، جس پر کئی افراد کو خدشات ہوسکتے ہیں، اور ملائیشیا مسلمانوں کا سب سے بڑا ملک ہے، اس وجہ سے فلم کو نمائش کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔انہوں نے اپنے بیان میں ان حساس موضوعات کی تفصیل نہیں بتائی، جنہیں بنیاد بنا کر فلم پر پابندی عائد کی گئی۔

واضح رہے کہ’پدماوت‘ کی کہانی 13 ویں صدی کے تاریخی واقعات کے گرد گھومتی ہے، فلم کی مرکزی کہانی اگرچہ ہندوستانی علاقے چتور گڑھ کی رانی پدمنی یعنی پدماوتی کے گرد گھومتی ہے، تاہم فلم میں مسلمان بادشاہ علاو¿ الدین خلجی کی تاریخ کو بھی بیان کیا گیا ہے۔