نواز شریف اور عمران خان کو جمہوریت کی فکر نہیں، آصف زرداری

نوشہرو فیروز:  پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیرمین آصف زرداری کا کہنا ہے کہ نواز شریف اور عمران خان کو جمہوریت کی فکر نہیں۔قوم کو کئی سوالوں کے جوابات کا انتظار ہے.

نوشہرو فیروز میں عوامی اجتماع سے خطاب کے دوران آصف علی زرداری نے کہا کہ ، پاکستان جس ڈگر پر کھڑا ہے اس کا اندازہ انٹرنیٹ پر بھی ہوسکتا ہے، ہم ماضی اور آج کے پاکستان کا موازنہ آسانی سے کرسکتے ہیں، آج پاکستان میں عوام کے ساتھ جانوروں جیسا سلوک کیا جارہا ہے۔ ہمارے دور حکومت میں ملک کی برآمدات آج کے مقابلے میں زیادہ تھیں، ہم نے ذوالفقار بھٹو کے تیار کردہ آئین کو مکمل کیا۔ 18ویں آئینی ترمیم کے ذریعے صوبوں کو اختیارات دیے۔ ہم نے پارلیمنٹ کو طاقت دی، اگر ایسا نہ ہوتا تو آج نواز شریف ملک کے صدر ہوتے۔ نواز شریف تو اپنے دور میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بھی کم نہیں کرسکے۔

آصف زرداری نے کہا کہ جمہوریت کی فکر نواز شریف کو ہے اور نا ہی عمران خان کو، اس کی قدر صرف مجھے ہے کیونکہ میں نے جیل کاٹی ہے۔ نواز شریف کے خلاف احتساب کی توابھی ابتدا ہے، مریم بی بی کی بات آئی ہے تو ان کو تکلیف ہوگئی، یہ بھول چکے ہیں کہ وہ بے نظیر بھٹو کو کتنی بار عدالتوں میں گھسیٹا کرتے تھے.

آصف علی زرداری نے مزید کہا کہ آج ان کو پتا لگ رہا ہے احتساب کیا ہوتا ہے، یہ تو ابتدا ہے ان کیساتھ تو کچھ ہوا ہی نہیں۔انہوں نے کہا کہ کل امریکا کا پاکستان کے خلاف بیان آیا تو چین نے ہماری مدد میں بیان جاری کیا،چین کے ساتھ سرمایہ کاری پیپلزپارٹی کا تحفہ ہے۔سابق صدر کا کہنا ہے کہ بھٹو کا دیا ہوا آئین ہم نے مکمل کیا ، پہلے بھی کہا تھا کہ یہ آراو الیکشن تھے لیکن جمہوریت کے خاطر سب قبول کیا ۔

آصف علی زرداری کا یہ بھی کہنا ہے کہ مجھے جمہوریت کی قد ر ہے، جبکہ نوازشریف کو نہیں ہے،حکمران ہمارے احتساب کو بھول چکے ہیں۔انہوں نے سوال کیا کہ میاں صاحب آپ کو اب معلوم ہوا کہ احتساب کیا ہوتا ہے،تاریخ بتار ہی ہے میاں صاحب آپ چھپ نہیں سکتے ۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے قائم علی شاہ کا کہنا تھا کہ پانامہ کیس نے میاں برادران کے اوسان خطا کر دیئے ہیں، پنجاب کے لوگ آصف زرداری کا انتظار کر رہے ہیں.

مصنف کے بارے میں