ملازمت کیلئے سعودی عرب جانیوالی لڑکی جنسی درندگی کا نشانہ بن گئی

ملازمت کیلئے سعودی عرب جانیوالی لڑکی جنسی درندگی کا نشانہ بن گئی

ریاض: ملازمت کیلئے سعودی عرب جانیوالی بھارتی لڑکی جنسی زیادتی کا نشانہ بننے کے بعد جان بچانے میں کامیاب ہوگئی۔ ذرائع ابلاغ کے مطابق بھارتی لڑکی ملازمت کی غرض سے سعودی گئی جہاں کفیل کا بیٹے اپنی والدہ کی میں اسے جنسی زیادتی کا نشانہ بناتا رہا۔


متاثرہ لڑکی نے ایک بیان میں بتایا کہ حیدر آباد سے اسکا ایجنٹ بیوٹی پارلر کی ملازمت کا جھانسہ دیکرسعودی عرب لیکر گیا مگر وہاں عربی کے گھر نوکری پر رکھوا دیا جہاں مجھے گزشتہ تین سالوں سے قید میں رکھا گیا اور حوس کا نشانہ بنایا جاتا رہا۔کفیل کا 25سالہ بیٹا اپنی والدہ کی موجودگی میں مجھے زبردستی اپنے کمرے میں لے جاتا اور جنسی زیادتی کا نشانہ بنا تا رہا۔

ریاض میں سماجی کارکن مہد عامر نے بتایا کہ لڑکی کو ابھی بھی خدشہ ہے کہ کفیل اسے پکڑ لے گا۔ایم بی ٹی کے رہنما امجد اللہ خان کا کہنا ہے کہ لڑکی کو حیدر آباد کے ایجنٹ نے ملازمت کا جھانسہ دیا تاہم اس معاملے کے منظر عام پر آنے کے بعد وزیر خارجہ سشما سراج کو خط لکھ دیا ہے۔