ناک سے خون کیوں بہتا ہے اور اسے کیسے روکا جائے؟

لاہور : گرمیوں میں ناک سے خون بہنا ایک معمولی بات ہے۔ اس کے علاوہ کئی بیماریوں جیسے ہائی بلڈ پریشر ، انفیکشن وغیرہ میں ناک سے خون جاری ہو سکتا ہے۔ اس کے علاوہ ناک کی اندرونی ہڈی ٹیڑھی ہونے کی صورت میں ناک زخمی ہونے کی صورت میں ، زکام وغیرہ میں ، ناک بہت زیادہ بہنے کی صورت میں یا ناک میں کوئی چیز گھس جانے کی صورت میں بھی ناک سے خون بہنا جاری ہو سکتا ہے۔

ناک سے خون کیوں بہتا ہے اور اسے کیسے روکا جائے؟

لاہور : گرمیوں میں ناک سے خون بہنا ایک معمولی بات ہے۔ اس کے علاوہ کئی بیماریوں جیسے ہائی بلڈ پریشر ، انفیکشن وغیرہ میں ناک سے خون جاری ہو سکتا ہے۔ اس کے علاوہ ناک کی اندرونی ہڈی ٹیڑھی ہونے کی صورت میں ناک زخمی ہونے کی صورت میں ، زکام وغیرہ میں ، ناک بہت زیادہ بہنے کی صورت میں یا ناک میں کوئی چیز گھس جانے کی صورت میں بھی ناک سے خون بہنا جاری ہو سکتا ہے۔ لیکن کچھ لوگ ناک میں خون آنے کی وجہ سے پریشان ہو جاتے ہیں اور اس پریشانی کی وجہ سے وہ یہ نہیں سمجھ پانے کے وہ اس وقت کیا کریں ۔ لیکن یہاں ہم آپ کو بتائیں گے کہ ناک سے خون کا بہاؤ روکنے کے لیے فوری طور پر مندرجہ ذیل اقدامات کرنے چاہئیں۔

اگر ناک سے خون بہنا شروع ہو جائے ،تو اسے آرام سے سر ذرا آگے کر کے بیٹھ جانا چاہیے اور ایک ہاتھ سے نتھنوں کو 10 منٹ تک دبایا جائے، مگر کسی صورت میں ناک کومسلا نہ جائے ناک کو دبانے کے ساتھ اگر میسر ہو تو ٹھنڈی پٹیاں یا برف ناک کے ساتھ لگائی جائے۔ عام طور پر جب کسی کے ناک سے خون بہنا شروع ہو جائے تو اس کے سر پہ پانی ڈالا جاتا ہے جس کا اچھا اثر ہوتا ہے۔ اگر اوپر والے طریقوں سے خون بہنا بند نہ ہو تو پھر مریض کو فوری طور پر ہسپتال بھیج دیا جائے جہاں مختلف طریقوں سے اس کا علاج کیا جاتا ہے۔