پنجاب نےوفاقی حکومت سے ریسٹورنٹس کھولنے کی سفارش کردی

پنجاب نےوفاقی حکومت سے ریسٹورنٹس کھولنے کی سفارش کردی

لاہور:پنجاب حکومت نےوفاقی حکومت سے ریسٹورنٹس کھولنے کی سفارش کردی اور ساتھ ہی مری اور گلیات میں ہوٹل انڈسٹری کو اجازت دینے کیلئے بھی وفاقی حکومت سےرجوع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔


ملک کے مختلف شہروں میں عید کی تعطیلات کے بعد ایس اوپیز کے تحت سرکاری دفاتر، بینکس، پیٹرول پمپس، فٹنس اینڈ ٹریننگ جم اور دکانیں کھل گئی ہیں۔

پنجاب حکومت نے ریسٹورنٹس کھولنے کی اجازت دینے کا مشروط فیصلہ کرلیا ہے اوراس سلسلے میں وفاقی حکومت سے بھی سفارش کردی ہے، معاملہ حتمی منظوری کیلئے نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی)کے اجلاس میں پیش کیاجائےگا، صوبائی وزیر عبدالعلیم خان کاکہنا ہے کہ ذمہ دارانہ طرز عمل کا مظاہرہ ہوا تو بتدریج پابندیاں نرم کرنے پر غورکریں گے۔

ریسٹورنٹ کھولنے کی اجازت دینے کا فیصلہ سینئر وزیر عبدالعلیم خان کی زیر صدارت پنجاب کابینہ کی کورونا کمیٹی کے اجلاس میں کیا گیا۔اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ پنجاب میں مارکیٹوں اورشاپنگ مالز کے اوقات کار صبح 9 سے شام 5 بجے ہوں گے ، مارکیٹیں ، بازار اورشاپنگ مالز کو ہفتے میں چار دن کاروبار کی اجازت ہوگی ، جمعہ ہفتہ اور اتوار کو مارکیٹیں ،شاپنگ مالز اوربازاربند رہیں گے۔

حکومت پنجاب نے مری او ر گلیات کو سیاحوں کیلئے کھولنے اور ہوٹل انڈسٹری کو اجازت دینے کے لیے وفاقی حکومت سےرجوع کرنے کافیصلہ کیا ہے۔اس کے علاوہ پنجاب پبلک سروس کمیشن کو سخت ایس او پیز کے ساتھ انٹرویو ز کی اجازت دینے کا فیصلہ بھی کیا گیا۔