قذافی حکومت کے خلاف انقلاب میں لیبیا کی مدد کی تھی،تیونسی صدرکا انکشاف

قذافی حکومت کے خلاف انقلاب میں لیبیا کی مدد کی تھی،تیونسی صدرکا انکشاف

تیونس سٹی :تیونسی صدر الباجی قائد السبسی نے کہا ہے کہ عرب بہاریہ تحریکوں میں صرف تیونس کا انقلاب ہی کامیاب رہا ہے۔عرب ٹی وی سے بات چیت میں صدر الباجی قائد السبسی نے اعتراف کیا کہ انھوں نے اگرچہ انقلاب میں حصہ نہیں لیا تھا اور وہ اس وقت وہ گھر ہی میں پڑے رہے تھے۔انھوں نے سیاسی اسلام کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وہ اس کو مسترد کرتے ہیں۔


الجزائر اور تیونس کی آزادی۔لیبیا کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ جب لیبی عوام کی بات کی جاتی ہے تو وہ مختلف ہیں اور ان کے تنازعات جلد ختم نہیں ہوں گے۔

لیبیا میں جاری بحران کا لیبی عوام ہی کوئی حل تلاش کریں گے۔انھوں نے یہ بھی انکشاف کیا کہ تیونس نے صدر معمر قذافی کی حکومت کے خلاف انقلاب میں لیبیا کی مدد کی تھی۔انھوں نے امریکا میں حالیہ صدارتی انتخابات کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ یہ اس کا داخلی معاملہ ہے۔البتہ ان کا کہنا تھا کہ امریکا کوئی عام ملک نہیں ہے بلکہ ایک سپر پاور ہے اور اس کا خارجہ امور سے تعلق ہے۔