کشمیر کا ہر راستہ پاکستان سے ہوکرگزرتا ہے:وزیراعظم آزاد کشمیرراجہ فاروق حیدر

کشمیر کا ہر راستہ پاکستان سے ہوکرگزرتا ہے:وزیراعظم آزاد کشمیرراجہ فاروق حیدر

مظفرآباد:وزیرا عظم آزادحکومت ریاست جموںوکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا ہے کہ کشمیر کا ہر راستہ پاکستان سے گزرتا ہے۔ کشمیریوںنے ہمیشہ استحکام پاکستان کے لیے قربانیاں دی ہیں۔ مقبوضہ کشمیر کے لوگ پاکستان کے جھنڈے لہرانا اور پاکستانی پرچم میں دفن ہونے پر فخر محسوس کرتے ہیں۔کشمیریوں بھارت کے ظلم کے سامنے نہ کھبی جھکے ہیں اور نہ ہی انکے حوصلہ پست ہوئے ہیں۔


ان خیالات کا اظہار انہوں نے منگل کے روز نیشنل انسٹیٹیوٹ آف مینجمنٹ کراچی کے سینئر مینجمنٹ کورس کے شرکاءسے بات چیت کرتے ہوئے کیا جنہوں نے ایوان وزیر اعظم میں ان سے ملاقات کی۔وزیر اعظم آزادکشمیر نے کہا کہ بیورو کریسی کسی بھی ریاست کا چہرہ ہوتی ہے۔پاکستان کی بیورو کریسی کو ریاست جموں وکشمیر کے بارہ میں مکمل آگاہی ہونی چاہیے تاکہ وہ ہر فورم پر کشمیر کا مقدمہ بہتر انداز میں پیش کر سکے۔انہوںنے کہاکہ کشمیری گزشتہ 70سال سے الحاق پاکستان کے لیے جدوجہد میں سرگرم عمل ہیں۔جس کے لیے انہوں نے بے پناہ قربانیاں دی ہیں۔ کشمیریوں کی جدوجہد لازوال قربانیوں سے بھری پڑی ہے۔

انہوں نے کہا کہ کشمیریوںکی پاکستان کے ساتھ کمٹمنٹ ہے جس کے لیے وہ قربانیاں دے رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ لائن آف کنٹرول پر بھارت کی جانب سے بلااشتعال فائرنگ سے وہاں کے ریائشیوں کے حوصلے پست نہیں ہوئے ۔کشمیری کسی بھی صورت ہندوستان کے آگے سر جھکانے والے نہیں اور نہ ہی کبھی تھکنے والے ہیں۔ بھارت اقوام متحدہ کی قراردادوں پر عملدرآمد سے پہلو تہی کر رہا ہے۔ کشمیریوں کی تحریک اسوقت تک جاری رہے گی جب تک انکو استصواب رائے کا پیدائشی حق نہیں مل جاتا ۔ انہوں نے کہا کہ محدود ترقیاتی بجٹ کے باوجود آزادکشمیر میں تعمیروترقی کا عمل بہتر ہے۔ ہمارا خطہ قدرتی وسائل سے مالا مال ہے۔ اس موقع پر نیشنل انسٹیٹیوٹ آف مینجمنٹ کے وفد نے وزیر اعظم کو کراچی آ کر NIMمیں لیکچر دینے کی بھی دعوت دی اور وزیر اعظم آزادکشمیر کو تحفہ بھی پیش کیا۔ وزیر اعظم نے وفد کے سربراہ کو سوئینئر بھی دیا۔