سیاحوں سے تلخ کلامی کے واقعات میں اضافہ ، مری کی سیاحت خطرات سےدوچار

سیاحوں سے تلخ کلامی کے واقعات میں اضافہ ، مری کی سیاحت خطرات سےدوچار
image by facebook

مری :مری میں سیاحوں کے ساتھ تلخ کلامی کے واقعات میں اضافے کی وجہ سےسیاحت کی صنعت خطرات سے دوچار ہے ، ایسے واقعات کی وجہ سے ملک بھر میں سیاحوں کی بڑی تعداد مایوسی کا شکار ہوئی ہے ۔


سیاحوں کے ساتھ جھگڑوں کی ویڈیوز سوشل میڈیا پر گردش کررہی ہیں جہاں مری کے بائیکاٹ کی مہم بھی چل پڑی ہے۔سیاحوں کا موقف ہے کہ مقامی افراد چھوٹی چھوٹی باتوں پر پریشان کرتے ہیں اور اہل خانہ کے ساتھ ہونے کا بھی خیال نہیں کرتے جبکہ اکثر فیملیز کو ہراساں کرنے کے واقعات بھی سامنے آئے ہیں۔

ادھر مقامی انتظامیہ اور پولیس کا اس حوالے سے کردار پر بھی سوالیہ نشان لگ گیا ہے۔ہوٹل ایسوسی ایشن کے نائب صدر حافظ عابد عباسی نے کہا ہے کہ اے ایس پی مری سے بار بار شکایت کے باوجود ان عناصر کے خلاف کوئی کارروائی نہیں ہورہی۔

انہوں نے کہا کہ مری کی انتظامیہ مسئلے پر خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پانچ مقامات پر لوگوں کو پریشان کیا جارہا ہے اور یہ مقامات مری میں داخل ہونے سے پہلے آتے ہیں۔حافظ عابد عباسی کا مزید کہنا تھا کہ پولیس سع متعدد مرتبہ شکایت کی جاچکی ہے تاہم اس حوالے سے کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔