مذہبی جماعتوں کا لانگ مارچ روکنے کیلئے کنٹینرز لگا کر جی ٹی روڈ بند

06:43 PM, 30 Aug, 2018

لالہ موسیٰ: تحریک لبیک کی قیادت میں داتا دربار سے شروع ہونے والا مذہبی جماعتوں کا لانگ مارچ اسلام آباد کی طرف رواں دواں ہے جبکہ پولیس نے ریلی کو دارالحکومت پہنچنے سے روکنے کےلیے کنٹینرز لگا کر جی ٹی روڈ بند کردی۔

 

تفصیلات کے مطابق توہین آمیز خاکوں کے خلاف تحریک لبیک کی قیادت میں لاہور سے نکلنے لانگ مارچ لالہ موسی پہنچ چکا ہے، قافلہ اسلام آباد پہنچ کر توہین آمیز خاکوں کے خلاف دھرنا دے گا۔ گزشتہ روز دینی جماعتوں کی جانب سے نکلنے والے لانگ مارچ کی قیادت تحریک لبیک پاکستان کے امیر خادم حسین رضوی کررہے ہیں-

 لانگ مارچ میں انجمن تاجران اوردینی جماعتوں کے سینکڑوں افراد شریک ہیں، جگہ جگہ قافلے کا استقبال کیا جارہا ہے ،شرکا ریلی نے بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے ہیں جن پر ہالینڈ کے خلاف نعرے درج ہیں۔ مظاہرین کا کہنا ہے کہ حکومت ہالینڈ کے سفیر کو ملک بددر کرکے ان کے ساتھ ہر قسم کے سفارتی تعلقات ختم کرے۔مقررین کا کہنا ہے کہ ہالینڈ میں گستاخانہ خاکے شائع کرنے والے ملعون افراد دنیا بھر کے ڈیڑھ ارب سے زائد مسلمانوں کے جذبات کو مجروح کر رہے ہیں، یہ مقابلے کروانے والے دنیا کے سب سے بڑے دہشت گرد ہیں۔

 

دوسری جانب ریلی کو روکنے کے لئے پولیس نے کنٹینرز لگا کر جی ٹی روڈ جگہ جگہ سے بند کردی ہے جس کے نتیجے میں لاہور سے اسلام آباد جانے والی ٹریفک کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔اسلام آباد میں بھی ریڈ زون کو محفوظ بنانے کے لئے کنٹینرز پہنچا دیئے گئے ہیں۔ ریلی کے منتظمین سے پہلے مذاکرات کرکے انہیں دھرنا دینے سے روکا جائے گا۔ بات چیت ناکام ہونے پر کنٹینر لگا دیئے جائیں گے-

 

سرائے عالمگیر میں بھی جہلم پل کو کنٹینر لگا کر بند کردیا گیا ہے اور پولیس کی بھاری نفری تعینات کردی گئی ہے۔واضح رہے کہ رواں سال جون میں ہالینڈ کی اسلام مخالف جماعت فریڈم پارٹی آف ڈچ کے متنازع رہنما گیرٹ ولڈرز نے پارلیمنٹ میں گستاخانہ خاکوں کا مقابلہ کروانے کا قبیح اعلان کیا ہے۔ پاکستان نے معاملے پر ہالینڈ کے ناظم الامور کو دفتر خارجہ طلب کرکے شدید احتجاج بھی کیا ہے

مزیدخبریں