الیکٹرانک ووٹنگ مشین سے صرف 15 سکینڈز میں نتیجہ ملے گا: وفاقی وزیر شبلی فراز

الیکٹرانک ووٹنگ مشین سے صرف 15 سکینڈز میں نتیجہ ملے گا: وفاقی وزیر شبلی فراز
سورس: فوٹو: بشکریہ ٹوئٹر

اسلام آباد: وفاقی وزیر برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی شبلی فراز نے کہا ہے کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین میں سب کچھ شفاف اور آسان ہو جائے گا اور 15 سیکنڈز میں نتیجہ ملے گا، یہ ووٹنگ مشین ہیک نہیں ہو سکتی۔ 

وفاقی وزیر شبلی فراز نے انجینئرنگ یونیورسٹی پشاور میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی حکومت نے انتخابی اصلاحات پر کام کیا اور صرف 90 روز کے اندر الیکٹرانک ووٹنگ مشین بنائی، عام طریقے سے گنتی میں 18 لاکھ ووٹ ضائع ہوتے ہیں لیکن اس مشین سے ووٹ ضائع نہیں ہو گا۔

شبلی فراز کا کہنا تھا کہ انتخابات میں اب لوگوں کے بجائے ٹیکنالوجی کا استعمال کریں گے اور جو لوگ کہتے ہیں کہ اس مشین سے دھاندلی ہو گی، وہ سن لیں کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین کا تعلق انٹرنیٹ سے نہیں ہے اور یہ ہیک نہیں ہو سکتی، اس لئے دھاندگی بھی نہیں ہو سکتی۔ 

انہوں نے کہا کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین سے جمہوریت کو فائدہ ملے گا اور آئندہ الیکشن ٹیکنالوجی کی مدد سے ہی ہو گا جبکہ اس میں ہر ووٹر کا ریکارڈ بھی موجود ہو گا، اپوزیشن اپنے ماہرین لا کر ووٹنگ مشین کا معائنہ کرے، ووٹنگ مشین میں ووٹر کی پرائیویسی محفوظ رہے گی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ جامعہ پشاور سے میرا ایک روحانی تعلق ہے، ہمارا مقصد صرف ڈگریاں بنانا نہیں بلکہ قابل انجینئرز پیدا کرنا ہے، ماضی میں تعلیم پر کسی نے خاص توجہ نہیں دی تھی لیکن پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی حکومت تعلیم پر بھرپور توجہ دے رہی ہے، ملک کے مستقبل کیلئے ساتھ مل کر کام کریں گے، میں چاہتا ہوں کہ یہ انجینئرنگ یونیورسٹی قومی سطح پر بہترین یونیورسٹیوں میں شمار ہو۔