آج کا جلسہ ایم کیو ایم کے23 اگست کے اقدام کی حمایت کا اعلان ہے، فاروق ستار

آج کا جلسہ ایم کیو ایم کے23 اگست کے اقدام کی حمایت کا اعلان ہے، فاروق ستار

کراچی: ایم کیو ایم پاکستان نے ملک میں 20صوبے بنانے کا مطالبہ کردیا ہے. پارٹی سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا ہے کہ بلدیاتی نظام اور ادارے پاکستان کا مستقبل ہیں کمزور نہیں کرنے دیں گے۔


نیو  نیوز کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار نے نشتر پارک میں جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ کراچی آج بھی ایم کیو ایم کے ساتھ تھا کل بھی ہوگا،کسی کو قیاس آرائیاں کرنے کی ضرورت نہیں ہے، یہ کراچی کی تاریخ کا سب سے بڑا جلسہ ہے، عوام نے ثابت کردیا کہ جلسی اورجلسے میں کیا فرق ہوتا ہے۔انہوں نے کہا ہے کہ شایدآج کے جلسے کا مقصد دعویٰ کرنے والوں کی بولتی بند کرنا ہے،آج کا جلسہ ایم کیو ایم کے23 اگست کے اقدام کی حمایت کا اعلان ہے. ایم کیو ایم کے بڑے جلسوں میں سے یہ ایک عظیم جلسہ ہے، آج کاجلسہ 2018 کے نتائج کامظاہرہ بھی ہے،پاکستان کی تاریخ میں اتنے کم وسائل سے پروقارجلسہ کسی کا نہیں ہوا، عوام نے تقسیم کرنے والوں کو مسترد کردیا،یہ عظیم کراچی کا عظیم تر اتحاد ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ ہم سندھ کے شہری عوام کامقدمہ ہر سطح پر اٹھانے والے ہیں،بلدیاتی نظام اور ادارے پاکستان کا مستقبل ہیں،پاکستان اورسندھ میں آئین کے مطابق بلدیاتی نظام قائم ہونا چاہیے،اگر بلدیاتی اداروں کو کمزور کیا گیا توپاکستان کمزور ہوگا، ماسٹر پلان بھی مقامی حکومتوں کو دیا ہے،واٹر بورڈ کو کراچی میٹروپولیٹن کے سپرد کیا جائے،20 یونٹ کو قائم کرنے کی تحریک کو کوئی نہیں روک سکتا۔

انہوں نے کہا ہے کہ وسیم اختر لاکھوں لوگوں کا ووٹ لے کر میئر منتخب ہوا، ہم ملک میں قانون کی حکمرانی چاہتے ہیں، اب کسی کی آبادی کوکم اور کسی کی آبادی کو زیادہ کرنے کا کھیل بند کیا جائے،سولڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈ بھی کے ایم سی کے ماتحت کیا جائے، بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی وسیم اختر کو دی جائے۔ انہوں نے کہا ہے کہ ہماری آبادی کوکم کرکے دیکھایا جا رہا ہے،ہمیں 3 سال میں جان بوجھ کراقلیت میں رکھا جارہا ہے.مردم شماری کروا کرحقائق سامنے لائے جائیں۔