آئندہ آنے والے چار تا پانچ مہینوں میں وزیر اعظم بڑے فیصلے کریں گے، فواد چوہدری

آئندہ آنے والے چار تا پانچ مہینوں میں وزیر اعظم بڑے فیصلے کریں گے، فواد چوہدری

اسلام آباد: وفاقی وزیر برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا ہے کہ آئندہ آنے والے چار پانچ مہینے وزیراعظم کے بڑے فیصلوں کے مہینے ہیں۔


فواد چوہدری نے کہا کہ استعفے دینے والے دونوں معاونین خصوصی اپنا موقف دے چکے ہیں، تانیہ ایدروس کے این جی او سے متعلق معاملہ چل رہا تھا، انہوں نے اس وجہ سے استعفی دیا۔انہوں نے کہا کہ بھارت سے ادویات درآمدکے معاملے سے صحت سے زیادہ فنانس ڈویژن کا تعلق ہے اور بھارت سے ادویات درآمد سے ڈاکٹر ظفرمرزاکا تعلق نہیں، آرٹیکل 91 کے مطابق آپ کے موقف سے وزیراعظم متفق ہوں گے تو آپ کام جاری رکھیں گے، وزیراعظم کے پاس اپنے اختیارات بھی ہیں اور ایگزیکٹو اتھارٹی بھی ہے۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ عمران خان کے سوا کسی اور سے اصلاحات کی توقع نہیں رکھ سکتے، وزیراعظم نے اہم فیصلوں سے پہلے ہی عندیہ دےدیا تھا، چار پانچ مہینے وزیراعظم کے بڑے فیصلوں کے مہینے ہیں۔

وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ عمران اسماعیل کو کراچی کے معاملات پر خدشات ہیں، سندھ حکومت این ایف سی پرگلے پھاڑ پھاڑ کر بات کرتی ہے لیکن سندھ حکومت سہولیات دینے کےلئے تیار نہیں، جب تمام اضلاع کو فنڈز جاری نہ ہوں گے، سندھ کے مسائل حل نہیں ہوں گے۔