نیب کے پاس بڑی مچھلیوں کیخلاف بدعنوانی اور منی لانڈرنگ کے ٹھوس ثبوت موجود ہیں’

نیب کے پاس بڑی مچھلیوں کیخلاف بدعنوانی اور منی لانڈرنگ کے ٹھوس ثبوت موجود ہیں’
کیپشن:   نیب کے پاس بڑی مچھلیوں کیخلاف بدعنوانی اور منی لانڈرنگ کے ٹھوس ثبوت موجود ہیں’ سورس:   فائل فوٹو

اسلام آباد: قومی احتساب بیورو (نیب) کے چیئرمین جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے کہا نیب کے پاس بڑی مچھلیوں کی اربوں روپے کی بدعنوانی اور منی لانڈرنگ کے ٹھوس ثبوت موجود ہیں جبکہ آٹا اور چینی سیکنڈل کو بھی منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین نیب کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ بابائے قوم قائد اعظم محمد علی جناح نے اسمبلی میں اپنے خطاب میں اقربا پروری اور رشوت ستانی کو بڑی برائی قرار دیا تھا۔ معزز احتساب عدالتوں میں قانون کے مطابق بدعنوانی کے 1230 ریفرنس دائر کئے جا چکے ہیں اور میگا کرپشن مقدمات کو منطقی انجام تک پہنچانا نیب کی اولین ترجیح ہے۔

جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے کہا کہ اپنے قیام سے اب تک 714 ارب روپے قومی خزانے میں جمع کروائے جو کہ نمایاں کامیابی ہے۔ نیب اقوام متحدہ کے انسداد بدعنوانی کنونشن کے تحت پاکستان کا فوکل ادارہ ہے۔ نیب کے پاس بڑی مچھلیوں کی اربوں روپے کی بدعنوانی اور منی لانڈرنگ کے ٹھوس ثبوت موجود ہیں جبکہ آٹا اور چینی سیکنڈل کو بھی منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ نیب پاکستان سارک اینٹی کرپشن فورم کا چیئرمین بھی ہے جو سارک ممالک کے لئے رول ماڈل کی حیثیت رکھتا ہے۔ عالمی اقتصادی فورم، ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل پاکستان، پلڈاٹ اور مشال پاکستان نے نیب کی انسداد بدعنوانی کی کوششوں کو سراہا ہے۔

خیال رہے دوسری جانب وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) نے بھی شوگر سٹہ مافیا کے الزام میں چیف فنانشل افسران (سی ایف اوز) سمیت 8 بڑے شوگر گروپس کے شعبہ سیلز کے سربراہوں کو طلب کر رکھا ہے۔ تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین کی جے ڈی ڈبلیو شوگر ملز کے چیف فنانشل افسران (سی ایف او) اور ہیڈز آف سیلز کے سربراہان کو 2 مئی کو طلب کیا ہے۔ 

علاوہ ازیں ایف آئی اے نے مریم نواز اور شریف فیملی کی چوہدری شوگر ملز کے عہدیداروں کو 31 مارچ، پنجاب اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز کی رمضان شوگر ملز کے عہدیداروں کو اپریل کو طلب کیا گیا ہے۔