پاکستان کرکٹ ایشیا کپ کا میزبان، بھارت پریشان

پاکستان کرکٹ ایشیا کپ کا میزبان، بھارت پریشان
Image by crictracker.com

ممبئی:پاکستان کو ایشیا کپ کی میزبانی ملتے ہی بھارت کو پریشانی ہونے لگی جبکہ میڈیا نے ابھی سے اپنی ٹیم کے سرحد پار جانے پر سوال اٹھا دیا۔ایشین کرکٹ کونسل کے سنگاپور میں ہونے والے اجلاس میں آئندہ برس شیڈول ایشیائی شوپیس ایونٹ کی میزبانی پاکستان کو دی گئی ہے، پی سی بی نے اس ٹورنامنٹ کو اپنے ملک میں ہی منعقد کرنے کی خواہش کا اظہار کیا ہے۔


ایشیا کپ 2020آئندہ برس آسٹریلیا میں شیڈول ٹی 20ورلڈ کپ سے قبل ستمبر میں مختصر ترین فارمیٹ میں ہی کھیلا جائے گا۔بھارتی میڈیا نے اعتراض اٹھایا کہ دونوں ممالک کے درمیان سیاسی کشیدگی اور تناﺅ کی وجہ سے ٹیم کے سرحد پار جانے کا امکان نہیں ہے، اسی لیے ایشین کرکٹ کونسل کی جانب سے ایونٹ کی میزبانی پاکستان کو دینے پر خوب تنقید ہوئی اور اسے حیران کن بھی قرار دیا گیا، بھارت ایشیا کپ کا اس وقت دفاعی چیمپئن ہے جس نے گذشتہ برس یو اے ای میں ہی ون ڈے فارمیٹ میں کھیلے گئے ایونٹ کے فائنل میں بنگلہ دیش کو شکست دی تھی۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ تب یہ ایونٹ بھارت میں ہی منعقد ہونا تھا مگر بی سی سی آئی نے پاکستان کے ساتھ تناﺅ کی کیفیت اور اپنے ملک میں گرین شرٹس کی میزبانی سے خود کو قاصر قرار دیتے ہوئے اسے متحدہ عرب امارات منتقل کردیا تھا۔

ادھر پی سی بی کے ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان نے ایشین کرکٹ کونسل کی میٹنگ کے شرکا سے کہا کہ وہ اس ایونٹ کی اپنے ملک میں ہی میزبانی کرنے کا ارادہ رکھتا ہے، البتہ حتمی فیصلہ دوسرے ممبران کے ساتھ مشاورت، ایونٹ کے قریب سیکیورٹی صورتحال و دیگر معاملات کو مدنظر رکھتے ہوئے کیا جائے گا۔ذرائع کے مطابق بھارت کے دورے سے انکار پر ایونٹ کو یو اے ای بھی منتقل کیا جا سکتا ہے۔