وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز نے ایک لاکھ روپے جرمانہ لاہور ہائیکورٹ میں جمع کرا دیا

وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز نے ایک لاکھ روپے جرمانہ لاہور ہائیکورٹ میں جمع کرا دیا

لاہور: پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنماءحمزہ شہباز شریف نے وزیراعلیٰ پنجاب کے الیکشن کے خلاف درخواستوں پر ایک لاکھ روپے جرمانہ اور تحریری جواب لاہور ہائیکورٹ میں جمع کرا دیا ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ میں وزیراعلیٰ پنجاب کے الیکشن کے خلاف پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) اور سپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی سمیت دیگر کی درخواستوں پر سماعت ہوئی جس دوران حمزہ شہباز نے تحریری جواب جمع کراتے ہوئے درخواستوں کو جرمانے کے ساتھ خارج کرنے کی استدعا کی۔ 

حمزہ شہباز نے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب کا انتخاب ہائیکورٹ کے احکامات کی روشنی میں بالکل آئین و قانون کے مطابق ہے اور سپریم کورٹ کی جانب سے آرٹیکل 63 اے کی تشریح سے قبل ہوا، قانون کے مطابق سپریم کورٹ کی تشریح کا وزیر اعلیٰ کے الیکشن پر کوئی اثر نہیں پڑے گا کیونکہ سپریم کورٹ کے فیصلے کا اطلاق ماضی سے نہیں ہو گا۔

حمزہ شہباز نے مزید کہا کہ سابق گورنر پنجاب عمر چیمہ کی جانب سے وزیراعلیٰ کے الیکشن سے متعلق چھان بین غیر قانونی تھی اور سیکرٹری اسمبلی کے پاس بھی الیکشن سے متعلق انکوائری کا کوئی اختیار نہیں، لہٰذا وزیراعلیٰ کے الیکشن کے خلاف درخواستوں کو جرمانے کے ساتھ خارج کیا جائے۔

ذرائع کے مطابق پنجاب حکومت نے بھی عدالتی حکم پر جواب جمع کرا دیا اور پنجاب حکومت کے وکیل نے عدالت کے روبرو موقف اختیار کیا کہ جرمانے کو ریکارڈ کا حصہ نہ بنایا جائے کیونکہ یہ افسران کی نوکری کا معاملہ ہے، عدالت نے پنجاب حکومت کے وکیل کی استدعا منظور کر لی۔

مصنف کے بارے میں