لاہور میں اسکول ٹیچر نے 7سالہ بچی کو جنسی درندگی کا نشانہ بنادیا

لاہور میں اسکول ٹیچر نے 7سالہ بچی کو جنسی درندگی کا نشانہ بنادیا

لاہور: انسانیت کا درس دینے والے مسیحا نے درندگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے دوسری جماعت کی طالبہ کو اپنی جنسی ہوس کا نشانہ بناڈالا ۔پولیس نے واقعے میں ملوث ٹیچر کوگرفتار کرکے مقدمہ درج کرلیا۔پولیس حکام کے مطابق قینچی امرسدھو کی رہائشی سات سالہ طالبہ گورنمنٹ ایلمنٹری اسکول مدینہ کالونی میں دوسری جماعت کی طالبہ ہے ٹیچر حبیب نے باقی بچوں کو چھٹی دے کر بچی کو اسکول میں ہی روک دیا اور اسے زیادتی کا نشانہ بنایا واقعے کے بعد بچی کا میڈیکل چیک اپ کرایا گیا جس میں زیادتی کی تصدیق ہوگئی بچی کے ساتھ ہونے والے جنسی درندگی پر اہل محلہ نے سخت احتجاج کیا اور فوری طور پر واقعے میں ملوث ٹیچر کو سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا مزید کسی اشتعال سے بچنے کے لئے پولیس نے مقدمہ درج کرتے ہوئے اسکول ٹیچر کو گرفتار کرلیا جبکہ اس کے ساتھ ساتھ اسکول ہیڈ ماسٹر کو غلط بیانی کرنے پر حراست میں لے لیا اسکول ہیڈ ماسٹر نے بچی کی اسکول میں موجودگی سے انکار کیا تھا۔متاثرہ بچی کے والد نے الزام عائد کیا ہے کہ اسکول میں بچیوں کو مرد جبکہ بچوں کوخواتین ٹیچرز پڑھاتے ہیں کئی بار انتظامیہ کو شکایت کی گئی مگر کوئی شنوائی نہیں ہوئی بچی کے والد نے وزیراعلیٰ پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ ملزم کو سخت سزا دی جائے۔


نیوویب ڈیسک< News Source