جنرل نکلسن کے بیانات سے پہلے ہی اختلاف کر چکے ہیں، دفتر خارجہ

جنرل نکلسن کے بیانات سے پہلے ہی اختلاف کر چکے ہیں، دفتر خارجہ

اسلام آباد: ہفتہ واربریفنگ کے دوران ترجمان دفتر خارجہ نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کی بھرپور مذمت کرتے ہوئے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں جاری ہیں۔ ایک ہفتے میں کئی نوجوانوں کو شہید کیا گیا ہے۔ ترجمان نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں کیمیائی ہتھیاروں کےاستعمال کی خبروں پر تشویش ہے۔ وادی میں کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کی خبریں پہلے بھی آتی رہی ہیں، کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال بین الااقوامی قوانین کی خلاف ورزی ہے اور اس معاملے کی تحقیقات ہونی چاہیے۔


ڈاکٹر فیصل کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال سے متعلق خبروں کی تصدیق لازمی ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ بھارت آزاد انسانی حقوق مشنز کو مقبوضہ کشمیر تک رسائی دے۔ ترجمان نے ممبئی حملوں پر بات کرتے ہوئے بتایا کہ سیکرٹری خارجہ گزشتہ روز ممبئی حملہ کیس میں اے ٹی سی میں پیش ہوئیں۔ عدالت کو بتایا گیا کہ بھارتی گواہوں کے بیانات نہ آنے سے تحقیقات آگے نہیں بڑھ رہیں۔ پاک امریکا تعلقات سے متعلق ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ نئی امریکی پالیسی کے بعد پاک امریکہ روابط میں کافی تیزی آئی ہم پاک امریکی مذاکرات کو مفید سمجھتے ہیں اور امریکی وزیر دفاع بھی پاکستان آ رہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ جنرل نکلسن کے بیانات نئے نہیں ہیں ہم جنرل نکلسن کے بیانات سے پہلے ہی اختلاف کر چکے ہیں۔ اسلامی اتحاد پر ترجمان کا کہنا تھا کہ پاکستان نے اسلامی اتحاد کو تجربات سے فائدہ پہنچانے کی پیشکش کی ہے اور فوجی اتحاد کے وزرائے دفاع کے پہلے اجلاس میں اہم چیزیں زیر غور آئیں۔ شدت پسندی سے نمٹنے اور میڈیا مہم پر بھی تبادلہ خیال ہوا جب کہ انسداد دہشت گردی کے لیے تعاون اور مشترکہ مشقوں کی تجویز زیر غور رہی۔

کلبھوشن یادیو کے معاملے پر ترجمان نے بتایا کہ بھارت کا کل بھوشن سے متعلق جواب موصول ہوا جس پر غور کیا جا رہا ہے تاہم کلبھوشن کی بیوی سے ملاقات کے معاملے پر کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا۔

ایک سوال کے جواب میں ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر فیصل نے کہا کہ حافظ سعید کو عدالت نے رہا کیا تھا۔ ڈاکٹر فیصل کا کہنا تھا کہ افغانستان میں افیون کی کاشت پر تشویش ہے کیونکہ افیون اور پوست دہشت گردوں کے لیے ایک بڑا ذریعہ آمدن ہے۔ افغان حکومت اور اتحادی افواج کو عالمی معاہدوں کے مطابق اقدامات کرنے چاہئیں۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں