پاک بحریہ کے جہازوں کا ایران کی بندرگاہ کا دورہ

پاک بحریہ کے جہازوں کا ایران کی بندرگاہ کا دورہ

اسلام آباد:  پاک بحریہ کے جہازوں پی این ایس راہ نَوَرد اورپی این ایس دہشت نے حال ہی میں ایران کی بندرگاہ بندر عباس کا دورہ کیا۔ بندر گاہ پہنچے پر ایران کی حکومت اور ایرانی بحریہ نے جہازوں کا پرتپاک استقبال کیا اور دورے کے دوران اعلیٰ میزبانی کا مظاہرہ کیا۔ دسویں پٹرول کرافٹ اسکواڈرن کے کمانڈر، کیپٹن خالد پرویز نے مشن کمانڈر کی حیثیت سے پاک بحریہ ٹاسک گروپ کی کمانڈ کی۔اس دورے کا مقصد خطے میں امن و سکیورٹی کو فروغ دینا ، میری ٹائم اشتراکیت میں اضافہ اور خطے کی دوست بحری افواج کے مابین باہمی تعاون کے نئے شعبہ جات کوتلاش کرنا تھا۔


اس دورے کے دوران پاک بحریہ کے وفد نے باہمی دلچسپی کے اُمور پر ایران کی بحری و عسکری قیادت سے کئی اہم ملاقاتیں کیں۔ ان ملاقاتوں میں ایران کی بحریہ کے کمانڈر فرسٹ نیول زون، کموڈور حسین آزاد، کمانڈر سرفیس فورس کیپٹن مصطفی تاجدینی، ہارموزگان صوبے کے گورنر جناب فریدون اور ایران کے سپریم کمانڈر آیت اللہ خامنی کے نمائندے آیت اللہ غلام علی نعیم آبادی سے ملاقاتیں شامل تھیں۔پاک بحریہ کے مشن کمانڈر کی طرف سے پی این ایس راہ نَوَرد پر ضیافت کا اہتمام کیا گیا جس میں اسلامی جمہوریہ پاکستان کے سفیر جناب آصف درانی، ایران کے سینئر عسکری و سول حکام اورپولینڈ،جاپان، جرمنی اورچین کے ملٹری اتاشیوں نے شرکت کی۔

ایک سال کے عرصے کے دوران پاک بحریہ کے جہازوں کا یہ دوسرا دورہ ہے جوپاکستان اور ایران کے درمیان پائے جانے والے باہمی احترام ، مشترکہ ثقافت و تاریخ اور بھائی چارے پر مبنی تعلقات کو مزیدمضبوط بنانے کا باعث ہے۔ پی این ایس راہ نَوَرد اور دہشت کا پڑوسی ملک ایران کا یہ دورہ دونوں ممالک کے درمیان باہمی میری ٹائم شراکت کو وسعت دینے کے لئے نئے در کھولنے کے ساتھ ساتھ امن اوربھائی چارے کے پیغام کا فروغ بھی ہے.