وزارت پٹرولیم میں 2 کھرب کی بے ضابطگی تشویشناک ہے, میاں مقصوداحمد

وزارت پٹرولیم میں 2 کھرب کی بے ضابطگی تشویشناک ہے, میاں مقصوداحمد

لاہور:  امیرجماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمدنے وزرات پٹرولیم میں  2  کھرب سے زائد   کی بے ضابطگیاں اورواپڈا   کا   گردشی قرضہ  500  ارب روپے تک پہنچنے پرشدید تشویش کا اظہارکرتے ہوئے کہاہے کہ کرپٹ حکمرانوں نے تمام سرکاری اداروں کو   تباہ وبرباد کردیا ہے۔ یہ حکومت کی انتہائی نااہلی اور مایوس کن کارکردگی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ موجودہ حکومت نے اقتدارمیں آتے ساتھ ہی بلند وبانگ دعوے کیے تھے اورچھ ماہ میں لوڈشیڈنگ کوختم کرنے کی نوید بھی سنائی تھی مگر بدقسمتی سے حکمرانوں کی ناکام پالیسیوں کی بدولت نہ تو لوڈشیڈنگ کاخاتمہ ہوسکا اور نہ ہی دیگر مسائل میں کمی ہوسکی۔گردشی قرضے پہلے سے بھی بڑھ چکے ہیں جبکہ رہی سہی کسروزارت پٹرولیم میں کھربوں روپے کی حالیہ کرپشن نے پوری کردی ہے۔


انہوں نے کہاکہ موسم سرماکی آمد کے باوجود لوڈشیڈنگ کا ہونااس بات کا واضح ثبوت ہے کہ حکومت بجلی کے بحران پر ابھی تک قابو نہیں پاسکی۔لوگوں کوکئی کئی گھنٹے تک بجلی کی بندش کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ملک میں لوٹ مار کابازار گرم ہے۔کمیشن مافیا غریب عوام کو لوٹنے میں مصروف ہے۔انہوں نے کہاکہ منافع بخش ادارے حکمرانوں کی عدم توجہی کے باعث خسارے میں جاچکے ہیں۔حکمران عوام الناس کو ریلیف فراہم کرنے اور ملک سے لوڈشیڈنگ کا مکمل خاتمہ کرنے میں ناکام ہوچکے ہیں۔سوا چار سال سے زائدکا عرصہ ہوچکا ہے مگر عوام کے مسائل حل ہونے کی بجائے ان میں اضافہ ہوا ہے۔انہوں نے کہا  کہ معاشی لحاظ سے ملک دن بدن ابتر صورتحال کا شکار ہوتا چلاجارہا ہے۔کرپشن نے ملکی معیشت کو عملاً مفلوج بناکر رکھ دیاہے۔

انہوں نے کہاکہ ملک وقوم کا سب سے بڑامسئلہ محب وطن قیادت کافقدان ہے۔اگر پاکستان کو پڑھی لکھی اور ایماندار قیادت میسر آجا ئے تویہ تیزی سے ترقی کرسکتا ہے۔ہمارے سامنے کئی ممالک کی مثالیں موجودہیں جہاں محب وطن قیادت نے کرپشن کے تمام راستے بند کرکے ملک وقوم کو باوقارممالک کی صف میں لاکھڑاکیا۔چین،ترکی،ملائیشیامیں عوام کامعیار زندگی بلند ہوچکا ہے اوران ملکوں کی معیشت بھی خاصی مضبوط ہوچکی ہے۔پاکستان میں بھی اگر کرپشن کاخاتمہ ہوجائے تو ملک بہت جلد ترقی وخوشحالی سے ہمکنار ہوسکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ضرورت اس امر کی ہے کہ فی الفور کرپٹ اور نااہل افراد سے چھٹکارہ حاصل کیاجائے اور اقتدار  دیانتدار، جرات مند اور بے لوث قیادت کے سپرد کیا جائے تو پاکستان کی تقدیر بدل سکتی ہے۔پاکستان کے21کروڑعوام کسمپرسی کی زندگی گزارنے پر مجبور ہیں۔حکمرانوں کی ڈنگ ٹپاو  پالیسیوں کی وجہ سے ملک وقوم کو ناقابل تلافی نقصان پہنچا ہے۔