قرضے میں ڈوبے پاکستان کے شہریوں کی دبئی میں 656 مزید جائیدادوں کا انکشاف

قرضے میں ڈوبے پاکستان کے شہریوں کی دبئی میں 656 مزید جائیدادوں کا انکشاف
Image by Best Interior Designers

اسلام آباد: قرضوں میں ڈوبے پاکستان کے شہریوں کی بیرون ممالک میں مزید جائیدادوں کا انکشاف ہوا ہے،ایف آئی اے کی سپریم کورٹ میں جمع کرائی گئی رپورٹ میں 220 مزید پاکستانیوں کی دبئی میں656 جائیدادوں کا انکشاف ہوا ہے۔رپورٹ میں بتایا گیا دبئی میں جائیدادیں بنانے والے پاکستانیوں کی تعداد 1115 تک پہنچ گئی۔ایمنسٹی سکیم سے فائدہ اٹھانے والوں میں سندھنے سب کو پیچھے چھوڑ دیا۔


تفصیلات کے مطابق مطابق ایف آئی اے نے سپریم کورٹ میں رپورٹ جمع کرائی جس میں مزید 220 پاکستانیوں کی دبئی میں 656 جائیدادوں کا انکشاف کیا گیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق دبئی میں جائیدادیں بنانے والے پاکستانیوں کی تعداد اب ایک ہزار115 تک پہنچ گئی، اِن پاکستانیوں کی دبئی میں 2 ہزار29 جائیدادیں ہیں، 417 پاکستانیوں نے ایمنسٹی سکیم کے تحت دبئی میں جائیدادیں ظاہرکیں جب کہ ایمنسٹی سکیم سے فائدہ اٹھانے والوں میں سندھ بازی لے گیا۔

رپورٹ کے مطابق سندھ کے 267 افراد نے ایمنسٹی سکیم کے تحت دبئی میں جائیدادیں ظاہرکیں، پنجاب کے 117، کے پی کے 4، اسلام آباد کے 2 افراد نے دبئی میں جائیدادیں ظاہرکیں جب کہ بلوچستان کے کسی شہری نے ایمنسٹی سکیم سے فائدہ نہیں اٹھایا۔

رپورٹ کے مطابق ایف آئی اے انکوائری افسر کے سامنے 351 پاکستانیوں نے جائیدادیں ظاہرکیں اور دبئی میں جائیدادیں رکھنے والے 63 پاکستانیوں کی شناخت نہ ہوسکی اورغیرشناخت پاکستانیوں میں 9 کا تعلق پنجاب، 43 کا سندھ اور 11 کا اسلام آباد سے ہے۔