ٹی 20 ورلڈکپ، پاکستان کی پہلی کامیابی، نیدرلینڈز کو 6 وکٹوں سے ہرا دیا

ٹی 20 ورلڈکپ، پاکستان کی پہلی کامیابی، نیدرلینڈز کو 6 وکٹوں سے ہرا دیا

پرتھ: انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) ٹی 20 ورلڈکپ کے 29 ویں میچ میں قومی ٹیم نے نیدرلینڈ کو 6 وکٹوں سے شکست دے کر ٹورنامنٹ کی پہلی کامیابی حاصل کر لی ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق پرتھ سٹیڈیم میں کھیلے گئے میچ میں نیدرلینڈز نے ٹاس جیت کر بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا تو اس کی بیٹنگ لائن شاہینوں کے سامنے ریت کی دیوار ثابت ہوئی اور مقررہ 20 اوورز میں 9 وکٹوں کے نقصان پر صرف 91 رنز بنا سکی۔ 

کولن ایکرمن نے سب سے زیادہ 27 رنز بنائے اور کپتان سکاٹ ایڈورڈ صرف 15 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئے جبکہ 9 بلے باز دوہرا ہندسہ عبور کرنے میں بھی کامیاب نہ ہو سکے۔ 

پاکستان کی جانب سے شاداب خان نے عمدہ باؤلنگ کرتے ہوئے 4 اوورز میں 22 رنز کے عوض 3 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی اور محمد وسیم جونیئر نے 2 وکٹیں حاصل کیں جبکہ شاہین شاہ آفریدی، نسیم شاہ اور حارث رؤف ایک، ایک کھلاڑی کو آؤٹ کرنے میں کامیاب ہوئے۔ 

قومی ٹیم نے مقررہ ہدف 13.5 اوورز میں صرف 4 وکٹوں کے نقصان پر حاصل کر کے ٹورنامنٹ کی پہلی کامیابی حاصل کی جبکہ سیمی فائنل کی دوڑ میں رہنے کیلئے بقیہ دو میچز جیتنا بھی لازمی ہے۔ 

پاکستان کی جانب سے محمد رضوان نے 39 گیندوں پر 49 رنز بنائے جن میں 5 چوکے بھی شامل ہیں جبکہ بابراعظم 4، فخر زمان 20، شان مسعود 12، افتخار احمد 6 اور شاداب خان 4 رنز بنا سکے۔ 

نیدرلینڈز کی جانب سے برینڈن گلوور سب سے کامیاب باؤلر رہے جنہوں نے 22 رنز کے عوض 2 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی جبکہ پال وین میکرن نے ایک وکٹ حاصل کی۔ 

واضح رہے کہ میچ کیلئے قومی ٹیم کی قیادت بابراعظم نے کی جبکہ ٹیم میں ایک تبدیلی کرتے ہوئے حیدر علی کی جگہ فخر زمان کو شامل کیا گیا۔ دیگر کھلاڑیوں میں محمد رضوان، شان مسعود، افتخار احمد، شاداب خان، محمد نواز، محمد وسیم جونیئر، شاہین شاہ آفریدی، حارث رﺅف اور نسیم شاہ شامل تھے۔ 

نیدرلینڈز کی قیادت سکاٹ ایڈورڈ نے کی جبکہ دیگر کھلاڑیوں میں سٹیفن مائیبرگ، میکس اوڈاؤڈ، باس ڈی لیڈ، کولن اینکرمین، ٹام کوپر، روئلوف وینڈر مروی، ٹم پرنگل، فریڈ کلاسن، برینڈن گلوور اور پال وین میکرن شامل تھے۔ 

یاد رہے کہ پاکستانی ٹیم ٹورنامنٹ میں اب تک کوئی میچ نہیں جیت سکی ہے اور ابتدائی دو میچز میں اسے بھارت اور زمبابوے کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا اور آج اسے ٹورنامنٹ کی پہلی کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ 

پاکستان کو سیمی فائنل کی دوڑ میں شامل رہنے کیلئے آج کے میچ سمیت اپنے بقیہ 2 میچز میں کامیابی حاصل کرنے کے ساتھ ناصرف رن ریٹ بہتر بنانے کی ضرورت ہے بلکہ دیگر ٹیموں کے میچز کے نتائج پر بھی انحصار کرنا ہو گا۔ 

مصنف کے بارے میں