12سالہ بچی کوہوس کا نشانہ بنانے والے شخص کیساتھ قدرت کا بھیانک انجام

12سالہ بچی کوہوس کا نشانہ بنانے والے شخص کیساتھ قدرت کا بھیانک انجام

بگوٹا: اسے قدرت کا انتقام ہی کہا جا سکتا ہے کہ کولمبیا میں ایک بچی کو ہوس کا نشانہ بنانے والے درندے نے اس بھیانک جرم کے فوری بعد خود کو پھانسی دے کر ہلاک کر ڈالا۔


 رپورٹ کے مطابق 12 سالہ لڑکی کو اراکا شہر کے علاقے میں ایک گاﺅں سے اغوا کیا گیا۔ لڑکی کے والدین کا کہنا ہے کہ انہوں نے اپنی بیٹی کو پراسرار طور پر غائب پاکر پولیس کو اطلاع کی جس کے بعد قریبی جنگل میں اس کی تلاش شروع کردی گئی۔ اسے تلاش کرنے والوں میں پولیس، مقامی ایمرجنسی و ریسکیو ڈیپارٹمنٹ اور گاﺅں والوں کی بڑی تعداد شامل تھی۔ چند گھنٹوں کے بعد گھنے جنگل میں ایک جگہ لڑکی زخمی حالت میں مل گئی، لیکن اس کے پاس ہی ایک ایسا منظر تھا کہ جسے دیکھنے والوں کے رونگٹے کھڑے ہوگئے۔

رپورٹ کے مطابق لڑکی برہنہ اور زخمی حالت میں زمین پر پڑی تھی جبکہ قریبی درخت کے ساتھ ایک شخص کی لاش لٹک رہی تھی۔ بعدازاں پولیس کی تحقیقات میں معلوم ہوا کہ یہ وہی بدبخت شخص تھا جس نے لڑکی کو اغوا کیا اور جنگل میں لیجاکر جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا۔ یہ بھیانک جرم کرنے کے بعد اس نے درخت پر رسی ڈالی اور گلے میں پھندا ڈال کر جھول گیا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ معاملے کی تحقیقات جاری ہیں تاحال یہ واضح نہیں کہ درندہ صفت شخص نے کمسن لڑکی کی عصمت دری کے بعد خود کو اپنے ہاتھوں سے پھانسی کیوں دی۔

نیوویب ڈیسک< News Source