بلاول کی پیشکش پر حکومت کا ایم کیو ایم پاکستان سے ملاقات کا فیصلہ

بلاول کی پیشکش پر حکومت کا ایم کیو ایم پاکستان سے ملاقات کا فیصلہ
ذرائع کے مطابق حکومتی رابطہ کمیٹی نے ایم کیو ایم قیادت سے ملاقات کا فیصلہ کیا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔فائل فوٹو

کراچی: بلاول بھٹو کی ایم کیو ایم کو وفاقی حکومت گرانے میں ساتھ دینے کی پیشکش کے معاملے پر ایم کیو ایم پاکستان کی قیادت 2 حصوں میں تقسیم ہو گئی ہے جبکہ حکومت نے ایم کیو ایم سے ملاقات کا فیصلہ کیا ہے۔


پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو کی ایم کیو ایم کو حکومت گرانے میں ساتھ دینے کی پیشکش کے معاملے میں ایم کیو ایم پاکستان کی قیادت 2 حصوں میں تقسیم ہو گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق ایک گروپ نے بلاول بھٹو کی پیشکش پر سنجیدگی سے غور کرنے کا مطالبہ کیا جب کہ دوسرے گروپ نے وفاقی حکومت کا حصہ بنے رہنے پر اتفاق کیا ہے۔

دوسری جانب ذرائع کے مطابق حکومتی رابطہ کمیٹی نے ایم کیو ایم قیادت سے ملاقات کا فیصلہ ہے۔ حکومتی وفد وزیراعظم کی ہدایت پررواں ہفتے ایم کیو ایم قیادت سے ملاقات کرے گا۔

حکومتی وفد جہانگیرترین کی قیادت میں ملاقات کرے گا جس میں ایم کیو ایم کے تحفظات، مطالبات اور سندھ کی مجموعی سیاسی صورتحال پر بات ہو گی۔

ملاقات میں اتحادیوں کے درمیان ورکنگ ریلیشن شپ اور تحریری معاہدے پر غور ہو گا جبکہ ایم کیو ایم کے فنڈزکے اجراء، بلدیاتی اختیارات کی واپسی، گمشدہ و اسیر کارکنان اور پارٹی آفس کھولنے کے معاملے پر تحفظات کو دور کیا جائے گا۔