کابینہ کا فیصلہ پارٹی کی اعلی قیادت کرے گی،شاہد خاقان عباسی

اسلام آباد: پاکستان مسلم لیگ (ن)کے نامزد عبوری وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ کابینہ مشاورت سے بنتی ہے اور اس کا فیصلہ پارٹی کی اعلیٰ قیادت کرے گی،جو ہماری حکومت کی ترجیحات تھیں وہی میری بھی رہیں گی،وزیراعظم آئینی طریقہ کار سے بنتا ہے،پٹیشنزکاکوئی اثر نہیں ہوگا،ہر قسم کی فضول پٹیشنز کرنے کی روایت پڑ گئی ہے۔

شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ جو ہماری حکومت کی ترجیحات تھیں وہی میری بھی رہیں گی۔ انہوں نے کہا کہ کابینہ مشاورت سے بنتی ہے، فیصلہ پارٹی کرتی ہے اور پارٹی کی اعلیٰ قیادت ہی یہ فیصلہ کرے گی جس میں میری مشاورت شامل ہوگی جب کہ کابینہ کا فیصلہ ایک دو روز میں ہوجائے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ ہماری لیڈر شپ نے ہمیں شائستگی کا سبق دیا، عوام فیصلہ کریں گے کہ ان کی زبان درست ہے یا ہماری۔شاہد خاقان نے مزید کہا کہ وزیراعظم آئینی طریقہ کار سے بنتا ہے، پٹیشنز کا کوئی اثر نہیں ہوگا، ہر قسم کی فضول پٹیشنز کرنے کی روایت پڑ گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں 30 سال سے اسمبلی میں ہوں اور 20 سے 22 بار اثاثوں کی تفصیلات دی ہیں، میرے اثاثوں سے متعلق جس کو شک ہو تو وہ درخواست دائرکرسکتا ہے، میں بغیرکسی وکیل کے اس درخواست کا جواب دوں گا۔واضح رہے کہ پاناما کیس میں نوازشریف کی بطور وزیراعظم نااہلی کے بعد مسلم لیگ(ن)نے شاہد خاقان عباسی کو عبوری وزیراعظم نامزد کیا ہے جب کہ عبوری مدت مکمل ہونے کے بعد شہبازشریف مستقل وزیراعظم ہوں گے۔

مصنف کے بارے میں