پاکستان اسٹاک مارکیٹ ایک بار پھر بلندیوں کی جانب گامزن

پاکستان اسٹاک مارکیٹ ایک بار پھر بلندیوں کی جانب گامزن

کراچی:  پانامہ کیس کا فیصلہ آنے کے بعد سیاسی افق پر چھائی بے یقینی کی کیفیت ختم ہوتے ہی پاکستان اسٹاک مارکیٹ ایک بار پھر بلندیوں کی جانب گامزن ہو گئی .کارروباری ہفتے کے آغاز پر پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں ایک موقع پر زبردست تیزی کا رجحان دیکھا گیااور کے ایس ای100انڈیکس1ہزار پوائنٹس بڑھکر 47100پوائنٹس کی بلند سطح کو چھو گیا تاہم کاروبار کے اختتام پر انڈیکس46ہزار پوائنٹس کی نفسیاتی حد پر ایک بار پھر بحال ہو گیا جبکہ مارکیٹ کے سرمائے میں33ارب سے زائد روپے کا اضافہ بھی ریکارڈ کیا گیا ہے ۔

پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں توانائی ،گیس ،اسٹیل سیمنٹ ،کیمیکل اور پیٹرولیم سیکٹر ز میں سرمایہ کاری کے باعث ٹریڈنگ کے دوران انڈیکس 1000سے زائد پوائنٹس کے اضافے سے 47000پوائنٹس کی حد عبور کر گیا تھا مگرفروخت کے دبائو کے سبب انڈیکس نئی سطح کو برقرار نہ رکھ سکا مگرمارکیٹ 46ہزار پوائنٹس کی نفسیاتی حد پر ایک بار پھر بحال ہو گئی ۔پیر کو کاروبار کے اختتام کے ایس ای100انڈیکس میں98.42پوائنٹس کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے کے ایس ای 100 انڈیکس 45912.03پوائنٹس سے بڑھ کر 46010.45پوائنٹس پر آگیا اسی طرح کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 115.35 پوائنٹس بڑھ کر 32553.38 پوائنٹس پر جا پہنچا اور کے ایم آئی 30 انڈیکس بھی 781.47 پوائنٹس کی تیزی رہی۔تاہم16.37پوائنٹس کی کمی سے کے ایس ای 30 انڈیکس 23837.63 پوائنٹس پر بند ہوا ۔کاروباری اتار چڑھائو کے باوجود مارکیٹ کا مجموعی سرمایہ33ارب30کروڑ3لاکھ65ہزار168روپے بڑھ کر 95کھرب47ارب 39کروڑ58لاکھ 76ہزر460روپے ہو گیا ۔ مجموعی طور پر 31 کروڑ 91 لاکھ 35 ہزار 20 حصص کا کاروبار ہوا جبکہ گذشتہ جمعہ کو 32کروڑ77لاکھ 56ہزارسے زائدشیئرز کے سودے ہوئے تھے ۔

پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں پیر کے روزمجموعی طوپر396کمپنیوں کاکاروبارہواجس میں سے275کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ،104میں کمی اور17کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔سب سے زیادہ تیزی یونی لیور فوڈز کے حصص کی قیمتوں میں ہوئی جس کے حصص کی قیمت 131.50 روپے کے اضافے سے 6431.50 روپے پر بند ہوئی۔ اسی طرح سانوفیل ایونٹس کے حصص کی سودے بھی 83.06 روپے کی تیزی سے 1744.42 روپے پر بند ہوئے۔ سب سے زیادہ مندی پیلپس مورس پاک اور شپہائر ٹیکسٹائل کے حصص کی قیمتوں میں ہوئی۔ پیلپس مورس پاک کے حصص کی قیمت 145.64 روپے کی مندی سے 2767.25 روپے اور شپہائر ٹیکسٹائل کے حصص کی قیمت بھی 99.98 روپے کی کمی سے  1900  روپے  رہ  گئی۔ 

 سب سے زیادہ کاروبار آزگارڈ نائن کے حصص میں ہوا جو 3 کروڑ 31 لاکھ 43 ہزار 500 شیئرز رہا جس کی قیمت 15.10 روپے سے شروع ہو کر 15.11 روپے پر بند ہوئی جبکہ کے الیکٹرک کے 1 کروڑ 97 لاکھ 73 ہزار 500 حصص کے سودے 6.65 روپے سے شروع ہو کر 6.56 روپے بند ہوئے۔