نواز شریف کی طبیعت میں بہتری، جیل واپس بھیجنے کی خبریں درست نہیں، ڈاکٹرز

11:11 AM, 31 Jul, 2018

اسلام آباد: پمز اسپتال کے ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کی طعبیت میں پہلے سے بہتری آئی ہے تاہم انہیں جیل واپس بھیجے جانے کی خبریں درست نہیں۔

 

ڈاکٹرز کے مطابق سابق وزیراعظم کی گزشتہ رات کی شوگر، بلڈپریشر اور ای سی جی کی رپورٹ مکمل نارمل نہیں یہی وجہ ہے کہ ‎نواز شریف کے تمام ٹیسٹ آج دوبارہ کیے جائیں گے۔

 

مزید پڑھیں: امریکا کا آئی ایم ایف سے پاکستان کیلئے بیل آؤٹ پیکج مشروط بنانے کا مطالبہ

 

ہارٹ اسپیشلسٹ ڈاکٹر نعیم اپنی 3 رکنی ٹیم کے ساتھ آج نواز شریف کا دوبارہ چیک اپ کریں گے۔ ڈاکٹرز کے مطابق ‎نواز شریف کی جیل واپسی ان کی صحت سے مشروط ہے اور ‎ان کی مکمل صحت یابی کی اطلاع متعلقہ حکام کو دے دی جائے گی۔

 

یاد رہے کہ احتساب عدالت نے 6 جولائی کو ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ سناتے ہوئے سابق وزیراعظم کو مجموعی طور پر 11 سال قید کی سزا کا حکم دیا تھا جس کے بعد 13 جولائی کو لندن سے وطن واپسی پر انہیں ایئرپورٹ سے ہی گرفتار کر کے اڈیالہ جیل منتقل کر دیا گیا تھا۔

 

یہ خبر بھی پڑھیں: 'ن لیگ کی حکومت نے جن ڈاکٹروں کو نکالا وہی نواز شریف کا علاج کر رہے ہیں'

29 جولائی کو سابق وزیراعظم نواز شریف کو طبیعت کی خرابی کے باعث ڈاکٹروں کی ہدایت پر اڈیالہ جیل سے پمز اسپتال منتقل کرکے کارڈیک سینٹر کے پرائیویٹ وارڈ کو سب جیل قرار دے دیا گیا تھا۔

 

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں

 

مزیدخبریں