چیئرمین سینیٹ اپنی عزت بچاتے ہوئے خود عہدے سے استعفیٰ دے دیں : بلاول بھٹو زرداری

چیئرمین سینیٹ اپنی عزت بچاتے ہوئے خود عہدے سے استعفیٰ دے دیں : بلاول بھٹو زرداری
image by facebook

 چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ چیئرمین سینیٹ کے لیے اچھا ہے کہ وہ اپنی عزت بچاتے ہوئے خود ہی اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیں، ونہ کل تو انہیں خود ہی جانا ہے۔


ان خیالات کا اظہار انہوں نے سینیٹ میں اپوزیشن ارکین کے لیے دیے گئے ظہرانے کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کی۔چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ اپوزیشن کے پاس چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کو ہٹانے اور ان کے خلاف تحریک عدم اعتماد کامیاب بنانے کے لیے مطلوبہ نمبرز موجود ہیں۔

بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ میری تجویز پہلے سے ہی تھی کہ چیئرمین سینیٹ اپنی عزت بچاتے ہوئے استعفیٰ دے دیں، ورنہ کل تو وہ جا ہی رہے ہیں۔پیپلز پارٹی کے سربراہ کی جانب سے دیے گئے ظہرانے میں نامزد چیئرمین سینیٹ میر حاصل بزنجو، ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا، شیری رحمٰن، رضا ربانی، راجہ ظفر الحق، عثمان خان کاکڑ، اشوک کمار، کرشنا کماری، رحمٰن ملک، مشاہد اللہ خان، یوسف بادینی، بہرامند تنگی، راحیلہ مگسی، عائشہ رضا، نجمہ حمید، نذہت صادق اور رخسانہ زبیری سمیت 51 اراکین نے شرکت کی۔

اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے نامزد چیئرمین سینیٹ میر حاصل خان بزنجو نے کہا ہے کہ وہ اسی دن جیت گئے تھے تھے جس دن انہیں چیئرمین سینیٹ نامزد کیا گیا تھا۔بلاول بھٹو زرداری کے ظہرانے میں شرکت کے بعد میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے میر حاصل بزنجو نے دعویٰ کیا کہ انہیں سینیٹ میں 65 اراکین کی حمایت حاصل ہے۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے موجودہ چیئرمین سینیٹ کو تجویز پیش کی کہ وہ اپنا استعفیٰ خود ہی پیش کر دیں۔