حکومت بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کو ختم کرنے کی سازش کر رہی ہے ، بلاول بھٹو

حکومت بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کو ختم کرنے کی سازش کر رہی ہے ، بلاول بھٹو
فائل فوٹو

شکارپور: بلاول بھٹو زرداری نے بینظیر انکم سپورٹ پروگرام سے محترمہ بینظیر بھٹو کا نام مٹانے کے اعلان پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ صرف محترمہ بینظیر بھٹو کا نام ختم کرنے کی نہیں بلکہ اس پروگرام کو ہی ختم کرنے کی سازش ہے۔


 

 تفصیلات کے مطابق ، پیپلز پارٹی چیئرمین  بلاول بھٹو نےشکارپور میں جنگلات میں پارک قائم کرنے کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کراچی سے لاڑکانہ تک ٹرین کا سفر اپنے گھر آنے کے لیے تھا مگر لوگوں کے جگہ جگہ پرتپاک اور شاندار استقبال نے ہمارے سیاسی مخالفین کو مجبور کر دیا کہ وہ اسے ٹرین مارچ کا نام دیں اور اسے سیاسی مقصد کا رنگ دیں ۔ 

بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ حکومت آج بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کا نام مٹائے  گی ،  کل پیسے کم کرے گی اور پھر اس پروگرام کو ہی بند کر دیں گے اور کہیں گے کہ اس پروگرام سے پیسہ ضائع ہورہا ہے جبکہ میں سمجھتا ہوں کہ یہ پیسے کا درست استعمال ہے ۔ 

 

انہوں نے کہا  کہ حکمران اٹھارویں ترمیم ختم کرنا چاہتے ہیں اور ملک میں ون یونٹ قائم کرنا چاہتے ہیں جو نہ ملک کے لیے اچھا ہے اور نہ جمہوری نظام  کے لیے اچھا ہوگا۔

 

بلاول بھٹو نے مذید کہا کہ  وفاق سندھ کے ساتھ سوتیلی ماں کا سلوک کر رہا ہے۔ سندھ کے فنڈز روکے جانے کے باعث یہاں پر ترقیاتی عمل متاثر ہو رہا ہے۔ ارسا پانی کے معاملے پر سندھ کے ساتھ ناانصافی کر رہا ہے۔

 

انہوں نے کہا کہ جنگلات کے حوالے سے ہماری زیرو ٹالرنس پالیسی ہوگی اور قبضے چاہے ہماری پارٹی کے لوگوں نے کیے ہوں یا مخالفین نے ان کو ختم کرائیں گے۔ جلد اس حوالے سے پالیسی متعارف کرائیں گے۔ محکمہ جنگلات کی اراضی کو کام میں لا رہے ہیں اور سندھ کے جنگلات کا ہر ممکن تحفظ کیا جائے گا۔