دفتر خارجہ نے کوئٹہ سے اغوا چینی باشندوں کے قتل کی تصدیق کر دی

دفتر خارجہ نے کوئٹہ سے اغوا چینی باشندوں کے قتل کی تصدیق کر دی

اسلام آباد:پاکستان میں چینی باشندوں کو قتل کر دیا گیا،،دفتر خارجہ نے کوئٹہ سے اغوا ہونے والے چینی باشندوں کے قتل کی تصدیق کر دی ہے، دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ ڈی این اے ٹیسٹ سے اس بات کی تصدیق ہوئی ہے کہ کوئٹہ سے اغوا ہونے والے دو چینی شہریوں کو قتل کردیا گیا۔


دفتر خارجہ سے جاری بیان کے مطابق چینی شہریوں لی زِنگ یانگ اور مینگ لی سی کو رواں سال 24 مئی کو کوئٹہ کے جناح ٹاو¿ن کے علاقے سے اغوا کیا گہا اور جون میں قتل کردیا گیا۔بیان میں اس عزم کا اظہار کیا گیا کہ پاکستانی حکومت واقعے کی مکمل تحقیقات کرائے گی اور اس میں ملوث افراد کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔

دفتر خارجہ کی طرف سے چینی حکومت اور مقتولین کے عزیز و اقارب سے تعزیت کرتے ہوئے بیان میں مزید کہا گیا کہ پاکستان ہر قسم کی دہشت گردی کی مذمت کرتا ہے اور اقوام عالم سے مل کر دہشت گردی کے خاتمے کے لیے پر عزم ہے۔

دفتر خارجہ کی جانب سے چینی جوڑے کے قتل کی تصدیق، شدت پسند تنظیم ’داعش‘ کی طرف سے انہیں اغوا کے بعد قتل کیے جانے کے دعوے کے کئی ماہ بعد کی گئی۔پاکستانی وزارت خارجہ نے الزام عائد کیا تھا کہ کوئٹہ سے اغوا ہونے والے چینی شہری تبلیغی سرگرمیوں میں مصروف تھے۔

وزارت خارجہ کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ۔اطلاعات کے مطابق بلوچستان سے اغوا ہونے والے دوچینی باشندوں نے بزنس ویزے کی خلاف ورزی کی اور پاکستان میں تبلیغی سرگرمیوں میں مصروف ہو گئے۔