عمران خان نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کو مسترد کر دیا

عمران خان نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کو مسترد کر دیا

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے وفاقی حکومت کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ مسترد کر دیا۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں پی ٹی آئی چیئرمین کا کہنا تھا کہ حکومت نے تیل کی قیمتوں میں اضافے سے عوام پر ٹیکسوں کا بوجھ بڑھانے کی ایک اور کوشش کی ہے۔


عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ حکومت طاقتور طبقے سے تو ٹیکس لے نہیں رہی لیکن شریفوں اور ان جیسے دوسرے لوگوں کو منی لانڈرنگ کے ذریعے قومی وسائل لوٹنے کی کھلی چھوٹ دے رکھی ہے۔

یاد رہے گزشتہ روز وزارت خزانہ نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی منظوری دی جس کے بعد قیمتوں میں اضافے کا نوٹی فکیشن جاری کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں: پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے پر اپوزیشن برہم

نوٹی فکیشن کے مطابق پیٹرول 3 روپے 56 پیسے اور ڈیزل 2 روپے 62 پیسے فی لٹر مہنگا جب کہ مٹی کا تیل 6 روپے 28 پیسے اور لائٹ ڈیزل ایک روپے فی لٹر مہنگا کیا گیا ۔ پیٹرول کی قیمت اضافے کے بعد 88 روپے 7 پیسے فی لیٹر ہو گئی ہے۔

خیال رہے وفاقی حکومت نے گزشتہ ماہ بھی پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کیا تھا۔ حکومت نے پیٹرول کی قیمت میں 2 روپے 28 پیسے فی لیٹر، ہائی اسپیڈ ڈیزل 5 روپے 92 پیسے، لائٹ ڈیزل 5 روپے 93 پیسے فی لیٹر اور مٹی کے تیل کی قیمتوں میں 5 روپے 94 پیسے فی لیٹر اضافہ کیا تھا۔

گزشتہ ماہ جاری ہونے والے نوٹیفیکیشن میں قیمتوں میں اضافے کی وجہ عالمی منڈی میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ قرار دیا گیا تھا۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں