سعودی عرب میں فیلڈ آپریشن کے دوران سات لاکھ سے زائد غیرقانونی تارکین وطن گرفتار کیے ، وزارتِ محنت

سعودی عرب میں فیلڈ آپریشن کے دوران سات لاکھ سے زائد غیرقانونی تارکین وطن گرفتار کیے ، وزارتِ محنت

ریاض: سعودی عرب میں غیرملکیوں کے لیے شروع کی جانے والی  ایمسنٹی سکیم کی مدت ختم ہونے سے لیکر اب تک لاکھوں غیر قانونی طور پر مملکت میں موجود غیر ملکیوں کو حراست میں لیا گیا  اور نامکمل دستاویزات کے حامل غیر ملکیوں کو ان کے ممالک واپس بھیجا گیا ۔تفصیلات کے مطابق سعودی وزارت محنت نے سکیورٹی اداروں کے ساتھ مشترکہ فیلڈ آپریشن کرکے اقامہ و محنت اور سرحدی سلامتی قوانین و ضوابط کی خلاف ورزی کرنے والےسات لاکھ افراد گرفتار کرلئے گئے۔


 یہ بھی پڑھیں :- سعودی عرب  پاکستانی  کاروباری افراد کو  تین سال کا ملٹی پل ویزہ دینے پر غور  کر رہا ہے، نواف سعید احمد

 سعودی وزارت  محنت کی جانب سے جاری کیے جانے والے اعدادو شمار کے مطابق یہ تمام  گرفتاریاں 26صفر 1439ھ سے لیکر11جمادی الثانی 1439ھ تک عمل میں آئیں۔ سعودی ذرائع کا مزید کہنا تھا کہ مملکت کے تمام علاقو ں میں مشترکہ سیکیورٹی آپریشن کئے گئے چھاپے مارے گئے۔ ان کے تحت اب تک 696454غیر قانونی تارکین پکڑے گئے۔

ان میں اقامہ قوانین کی خلاف ورزی پر 489376، محنت قوانین کی خلاف ورزی پر 145522 اور سرحدی سلامتی قانون پامال کرنے پر 61556گرفتارکئے گئے۔9837درانداز پکڑے گئے جن میں63فیصد یمنی، 34فیصد ایتھوپین اور 3فیصد مختلف ممالک کے تھے۔ علاوہ ازیں 529ایسے افراد پکڑے گئے جوسعودی عرب سے سرحد پار کرکے باہر جانے کی کوشش کررہے تھے۔