منی لانڈرنگ کیس میں فریال تالپور کی ضمانت قبل از گرفتاری منظور

منی لانڈرنگ کیس میں فریال تالپور کی ضمانت قبل از گرفتاری منظور

فریال تالپور سندھ اسمبلی کے حلقہ پی ایس 10 لاڑکانہ ون سے امیدوار ہیں۔۔۔فائل فوٹو

لاڑکانہ: سندھ ہائیکورٹ سرکٹ بینچ نے پی پی رہنما فریال تالپور کی منی لانڈرنگ کیس میں حفاظتی ضمانت منظور کر لی۔ سندھ اسمبلی کے حلقہ پی ایس 10 لاڑکانہ ون سے پی پی امیدوار فریال تالپور نے ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست دائر کی تھی۔

سندھ ہائیکورٹ کے جسٹس ارشاد احمد شاہ اور جسٹس رشید سومرو پر مشتمل بینچ نے درخواست پر سماعت کی جس دوران فریال تالپور نے عدالت میں مؤقف اپنایا کہ ایف آئی اے نے سیاسی مقدمات درج کیے ور اس کا مقصد انتخابات میں حصہ لینے سے روکنا ہے۔

 

عدالت عالیہ کے بینچ نے پیپلز پارٹی کی رہنما کے مؤقف کو تسلیم کرتے ہوئے ان کی 6 روزہ حفاظتی ضمانت منظور کر لی۔

 

مزید پڑھیں: 'نجی میڈیکل کالجوں کو عطیات وصول کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی'

گزشتہ روز وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) نے منی لانڈرنگ کیس میں گرفتار نجی بینک کے سربراہ حسین لوائی کے خلاف چالان جمع کرایا جس میں آصف زرداری اور فریال تالپور کو مفرور ملزم قرار دیا گیا ہے۔

 

واضح رہے کہ اسی کیس میں ایف آئی اے اور سپریم کورٹ نے آصف زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور کو طلب کیا تھا تاہم دونوں شخصیات نے اپنے وکلا کے ذریعے جواب جمع کرایا ہے جب کہ سپریم کورٹ نے ایف آئی اے کو دونوں شخصیات کو الیکشن تک طلب کرنے سے روک دیا تھا۔

 

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں