نثار کے بارے میں جو پارٹی فیصلہ ہو گا وہی ہمارا ہو گا، سابق وزیراعظم

نثار کے بارے میں جو پارٹی فیصلہ ہو گا وہی ہمارا ہو گا، سابق وزیراعظم

بدقسمتی سے بیان حلفی کی وجہ سے مسئلہ پیدا ہوا جس کی ضرورت نہیں تھی، سابق وزیراعظم۔۔۔۔فائل فوٹو

راولپنڈی: میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ کاعذات نامزدگی میں ٹیمپرنگ نہیں کی گئی اور میرے وکیل نے عدالت کے سامنے اضافی معلومات پیش کی ہیں۔

 

انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے بیان حلفی کی وجہ سے مسئلہ پیدا ہوا جس کی ضرورت نہیں تھی اور حلف نامے سے مشکلات پیدا ہو رہی ہے جبکہ پہلے بھی کہا تھا کہ الیکشن کے فیصلے عدالت نہیں عوام کرتے ہیں۔

 

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ 25 جولائی کو الیکشن نہ ہوئے تو روکنے والوں پر آرٹیکل 6 لگنا چاہیے کیونکہ مسلم لیگ (ن) کا مقابلہ تمام جماعتوں سے ہو گا اور مسلم لیگ (ن) کے زیادہ تر امیدوار عدالتوں کے چکر لگا رہے ہیں اور الیکشن مہم نہ چلانے سے مشکلات ہوگئیں۔

 

مزید پڑھیں: چھ ماہ دھرنے دیئے جائیں گے تو ملک کیسے ترقی کرے گا، شہباز شریف

ایک سوال کے جواب میں شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ چوہدری نثار کے خلاف امیدوار کھڑا کرنے کا فیصلہ پارٹی نے کیا اور پارٹی جو فیصلہ کرے گی وہی ہمارا فیصلہ ہو گا۔

 

ان کا کہنا تھا کہ میرے حلقے کے عوام میرے ساتھ ہیں کیونکہ حلقے میں گیس کنکشن نہ ملنے پر 12 افراد نے احتجاج کیا جبکہ سب کے احتجاج سننے کو تیار ہوں اور یہی جمہوریت ہے۔

 

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں